اُس وقت تک خاموش نہیں بیٹھیں گے جب تک ووٹ چوروں کا محاسبہ نہ کرلیں،اسفندیارولی خان

اسفند یار ولی

پشاور:عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی )کے سربراہ اسفندیار ولی خان نے کہا ہے کہ 31اکتوبر کو الیکشن  اور ووٹ چوروں کے پیچھے جائینگے۔

اے این پی کے سربراہ نے ولی باغ چارسدہ سے آزادی مارچ کے حوالے سے جاری  اپنے ایک وڈیو بیان میں کہاہے کہ   اُس وقت تک خاموش نہیں بیٹھیں گے جب تک ووٹ چوروں کا محاسبہ نہ کرلیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے خلاف نکلنا جہاد کے مترادف ہے،مہنگائی نے عوام کا جینا مشکل کردیا ہے۔

اسفندیارولی خان نے کہاہےکہ  غریب اور متوسط طبقہ اس قابل نہیں رہا کہ وہ اپنے لیے آٹے کی بوری بھی خرید سکے۔ کپتان دیگر سیاسی قائدین کی کرپشن کی فکر چھوڑ کر پہلے اپنی بہن کا حساب قوم کے سامنے رکھیں ۔

اے این پی سربراہ نے کہا کہ  کپتان نے مجھ پر ایک روپے کی کرپشن ثابت کی تو مجھے سزا دینے کی بجائے سر عام پھانسی دے دیں ۔ کپتان یاد رکھیں کہ ایک دن ایسا آنے والا ہے کہ وہ ہم سے این آر او مانگے گا۔

یہ بھی پڑھیے: رکاوٹیں کھڑی کرکے اپوزیشن کو کیا پیغام دیا جارہا ہے کہ حکومت ڈر گئی ہے؟اسفندیارولی خان

اسفندیار ولی خان نے کہا کہ  اے این پی کپتان سے نہ این آر او مانگ رہی ہے اور نہ ہی ہمیں این آر او کی ضرورت ہے۔


متعلقہ خبریں