اسلام آباد: انسانی اسمگلنگ میں ملوث نیٹ ورک کے دو ایجنٹوں سمیت چھ افراد گرفتار

ایف آئی اے میں تعینات دیگر محکموں کے افسران کی چھٹی

اسلام آباد: فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے اسلام آباد ایئرپورٹ پر کارروائی کرتے ہوئے انسانی اسمگلنگ میں ملوث نیٹ ورک کے دو ایجنٹوں سمیت چھ افراد کو گرفتار کرلیا ہے۔ گرفتار افراد کو تفتیش و تحقیق کے لیے ایئرپورٹ سے منتقل کردیا گیا ہے۔

ایف آئی اے کے اپنے لوگوں نے اسمگلرز کیساتھ ڈیٹا شئیر کیا، ڈائریکٹر ایف آئی اے

ہم نیوز نے انتہائی ذمہ دار ذرائع سے بتایا ہے کہ ابتدائی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ دو ملزمان طلحہ شہزاد اور جواد غنی اپنے ہمراہ چار افراد کو پرواز کیو آر-615 سے کمبوڈیا براستہ قطر لے جارہے تھے۔

ذرائع کے مطابق دونوں ملزمان نے حریم ٹریول کے نام سے ایک جعلی ٹریول ایجنسی کی دستاویزات تیار کررکھی تھیں جو بغور معائنے پہ جعلی ثابت ہوئیں۔

ہم نیوز کو ذرائع نے بتایا کہ طلحہ شہزاد اور جواد غنی نے اپنے ہمراہ جانے والے چاروں افراد سرفراز، ذیشان، نعمان اور حامد کو کاغذات میں اپنے ملازمین ظاہر کیا ہوا تھا لیکن جب ابتدائی طور پرپوچھ گوچھ کی گئی تو یہ حقیقت سامنے آئی کہ دونوں ملزمان نے چاروں افراد سے کمبوڈیا لے جانے کے لیے فی کس چار لاکھ 20 ہزار روپے وصول کیے ہیں۔

ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ملزمان نے کمبوڈیا کے ویزے جعلی دستاویزات کے ذریعے ویتنام سے حاصل کیے تھے۔ تفتیش میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ ملزم طلحہ شہزاد کا ایک بھائی کمبوڈیا میں رہائش پذیر ہے اور وہ انسانی اسمگلنگ میں ملوث ہے۔

سٹیزن پورٹل: شکایات حل نہ کرنے پر ڈی جی ایف آئی اے سے وضاحت طلب

ہم نیوز کے مطابق ملزمان کے خلاف ایف آئی اے نے انسانی اسمگلنگ کی دفعات کے تحت مقدمہ بھی درج کرلیا ہے۔ اس ضمن میں مزید تفتیش و تحقیق جاری ہیں۔


متعلقہ خبریں