الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات کو متنازعہ بنا دیا، شاہد خاقان


سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات کو متنازعہ بنا دیا ہے۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہنا تھا کہ آئین میں ترمیم صرف پارلیمنٹ میں ہوسکتی ہے، ووٹ خریدنے اور بیچنے والے پی ٹی آئی کے لوگ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: پی ٹی آئی نے یوسف رضا گیلانی کے کاغذات نامزدگی چیلنج کر دیے

انہوں نے کہا کہ سینیٹ الیکشن کیا پاکستان میں تو قومی اور صوبائی الیکشن بھی چوری ہوتے ہیں۔

پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کا کہنا تھا کہ میرے وکلا نے کہا حفیظ شیخ کے کاغذات چیلنج کرتے ہیں، وہ میری سابقہ کابینہ کا حصہ ہیں، حفیظ شیخ کے خلاف اعتراضات داخل نہیں کرنا چاہتا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ اپوزیشن اراکین کے پروڈکشن آرڈر جاری کیے جائیں، حکومت میرے خلاف پورا زور لگا رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سینیٹ الیکشن میں ہمارے 14 ووٹ زیادہ تھے لیکن ہم ہار گئے، حکومت کو اپوزیشن سے بات کرنا ہو گی۔

سینیٹ الیکشن میں پیپلزپارٹی کے امیدوار یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ مخالف امیدوار کے پاس دستاویزات نہیں تھیں لیکن انہیں وقت دیا گیا۔

دوسری جانب پی ٹی آئی امیدوارکے وکیل نے ریٹرننگ افسر سے اعتراضات پر دلائل کیلئے وقت مانگ لیا جب کہ یوسف رضا گیلانی کے وکیل نے التوا کی مخالفت کر دی۔

یہ بھی پڑھیں: میں ہارس ٹریڈنگ پر یقین نہیں رکھتا، یوسف رضا گیلانی

وکیل یوسف رضا گیلانی نے موقف اختیارکیا کہ یوسف رضا گیلانی اپنی سزا پوری کر چکے لہٰذا اب وہ  الیکشن میں حصہ لے سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یوسف رضا گیلانی کی نا اہلی 2017 میں ختم ہو چکی ہے۔ ریٹرننگ افسر نے درخواست گزار کو دلائل کے لئے 3 بجے تک کا وقت دے دیا۔


متعلقہ خبریں