فلسطینی بستی میں یہودیوں کیلئے 1000 گھر تعمیر کرنے کا فیصلہ

house

اب ہوگا اپنا گھر سرکاری ملازمین اور عام شہریوں کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی


یروشلم: اسرائیل نے فلسطینی بستی میں یہودیوں کے لیے مزید ایک ہزار گھر تعمیر کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے فلسطین کی بستی ’ایلی‘ میں یہودیوں کے لیے مزید ایک ہزار نئے گھر تعمیر کرنے کے اجازت نامے پر دستخط کر دیئے ہیں۔

فلسطینی بستی میں بڑی تعداد میں یہودیوں کے گھر تعمیر کرنے کا فیصلہ نیتن یاہو، وزیر دفاع یواو گیلنٹ اور وزیر خزانہ بیزالیل اسموٹریچ کے درمیان ملاقات میں کیا گیا۔

اسرائیلی وزیر اعظم نے فلسطین میں مزید اسرائیلی گھروں کی تعمیر کا عمل تیز کرنے پر زور دیا۔

یہ بھی پڑھیں: پیرس میں دھماکہ، 30 افراد زخمی

اسرائیلی وزارت عظمیٰ کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ فلسطینی دہشت گرد ہیں اور ان کی جانب سے مزاحمت پر ہمارا ردعمل انہیں سختی سے نشانہ بنانا اور تعمیری کام کو جاری رکھنا ہو گا۔

بیان میں کہا گیا کہ اسرائیل مقبوضہ مغربی کنارے کی بستی ایلی میں ایک ہزار نئے مکانات تعمیر کرے گا۔ وزیر اعظم نیتن یاہو، وزیر دفاع اور وزیر خزانہ نے فوری طور پر منصوبے کو عملی جامہ پہنانے پر اتفاق کیا۔


متعلقہ خبریں