بھارت کی چینی کرنسی میں روس سے تیل کی خریداری

خام تیل

عالمی سطح پر تیل کی قیمتیں گر گئیں


روس سے خام تیل کی خریداری کے لئے بھارت نے امریکی کرنسی کی بجائے چینی کرنسی یوآن میں ادائیگی کا آغاز کر دیا ہے۔

برطانیہ کی نیوزایجنسی کا کہنا تھا کہ انڈین آئل کارپوریشن روسی تیل کا سب سے بڑا خریدار ہے، بھارتی کمپنی نے تیل کی قیمت کی ادائیگی ڈالر کی بجائے چینی کرنسی میں کی ہے۔

بھارت کی تین نجی کمپنیاں روس سے تیل خرید رہی ہیں لیکن وہ بھی ڈالر کی بجائے چینی کرنسی میں ادائیگی کر رہی ہیں، اس طرح بھارتی کمپنیوں نے تیل کی ادائیگیاں ڈالر کی بجائے چینی کرنسی میں کرنا شروع کر دی ہیں۔

روس سے خام تیل کی آمد: ایک اور وعدہ پورا کردیا، شہبازشریف

واضح رہے کہ پاکستان نے بھی روس سے تیل کی خریداری کی ادائیگی امریکی ڈالر کی بجائے چینی کرنسی میں کی تھی، اس حوالے سے وزیر پیٹرولیم مصدق ملک نے تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس ایندھن کی ادائیگی چین کی کرنسی آر ایم بی (یوآن) میں کی گئی ہے۔

یادرہے کہ بہت سے ممالک ڈالر کی اجارہ داری ختم کرنے کے لئے اپنی کرنسیوں میں ادائیگیوں پر ترجیح دے رہے ہیں، ان میں چین اور روس سرفہرست ہیں۔


متعلقہ خبریں