ترکیہ کے رکن پارلیمنٹ ایوان میں اسرائیل مخالف تقریر کے دوران انتقال کر گئے


ترکیہ کے رکن پارلیمنٹ ایوان میں اسرائیل مخالف تقریر کے بعد دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے۔

غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ترکیہ میں حزب اختلاف کے رکن پارلیمنٹ54 سالہ حسن بٹمیز نے پارلیمنٹ میں تقریر کی اور اس دوران انہوں نے اسرائیل کے بارے میں حکومتی پالیسی کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

تقریر کے اختتامی کلمات کی ادائیگی کے دوران رکن پارلیمنٹ کو دل کا دورہ پڑا اور وہ زمین پر گر گئے جس کے بعد انھیں انقرہ سٹی ہسپتا ل منتقل کیا لیکن وہ جانبر نہ ہوسکے۔

ترکیہ کے وزیر صحت فرحتین کوکا نے ٹیلی ویژن پر صحافیوں سے گفتگو میں تصدیق کی کہ حزب اختلاف کی جماعت فیلیسٹی (سادات) پارٹی سے تعلق رکھنے والے حسن بٹمیز انتقال کر گئے ہیں۔

قاہرہ کی الازہر یونیورسٹی سے فارغ التحصیل حسن بٹمیز سینٹر فار اسلامک یونین کے چیئرمین تھے اور اس سے قبل وہ اسلامی غیر سرکاری تنظیموں کے لئے کام کر چکے ہیں۔

انتقال سے قبل رکن پارلیمنٹ غزہ میں جنگ کے باوجود ترکی کی اسرائیل کے ساتھ جاری تجارت پر صدر رجب طیب اردوان کی حکمراں جماعت اے کے پی کو تنقید کا نشانہ بنا رہے تھے۔


متعلقہ خبریں