شیر افضل مروت کو رہا کر دیا گیا


پاکستان تحریک انصاف کے سینئر نائب صدر شیر افضل مروت کو کوٹ لکپت جیل سے رہا کر دیا گیا،انہیں چند روز قبل لاہور ہائی کورٹ کے باہر سے گرفتار کیا گیا تھا۔

لاہور ہائیکورٹ نے 4 روز قبل گرفتارہونیوالے شیر افضل مروت کی نظر بندی کالعدم قرار دیتے ہوئے رہا کر نے کا حکم جا ری کیا تھا۔ پی ٹی آئی رہنما کے رہا ہونے کے بعد ان کی ویڈیو سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہے جس میں ان کے حامی نعرے بازی کر رہے ہیں۔

شیر افضل مروت کو 1 ماہ کیلئے 16 ایم پی او کے تحت نظر بند

خیال رہے کہ جسٹس شہرام سرور چوہدری نے شیر افضل مروت کی نظر بندی کے خلاف درخواست پر سماعت کی تھی۔ جس میں ڈپٹی کمشنر کے سامنے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کے بعد پی ٹی آئی رہنما کو رہا کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔

لاہور ہائی کورٹ نے شیر افضل مروت کی ایم پی او کے تحت نظر بندی کے خلاف درخواست پر سماعت کرتے ہوئے یہ حکم دیا تھا۔

شیر افضل مروت کی نظر بندی کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ درخواست میں ڈی سی اور آئی جی پنجاب سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا تھا۔ 15 دسمبر کو جسٹس شہرام سرور چوہدری نے چیمبر میں درخواست پر سماعت کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر اور پولیس کو نوٹس جاری کیے تھے۔

کرپشن کیس میں فواد چوہدری کی ضمانت منظور ، رہائی کا حکم

درخواست میں موقف اپنایا گیا تھا کہ پی ٹی آئی رہنما لاہور ہائیکورٹ بار میں خطاب کرکے واپس روانہ ہوئے تو انہیں گرفتار کرلیا گیا جو غیر قانونی و غیر آئینی ہے۔

خیال رہے کہ شیر افضل مروت کو گزشتہ دنوں لاہور ہائیکورٹ کے باہر جی پی او چوک سے حراست میں لیا گیا تھا جس کے بعد انہیں 1 ماہ کیلئے 16 ایم پی او کے تحت نظر بند کر دیا گیا تھا۔


متعلقہ خبریں