پنجاب میں 24 گھنٹوں کے دوران 1077 بچے نمونیا میں مبتلا ، 12 انتقال کر گئے

نمونیا

پنجاب میں 24 گھنٹوں کے دوران مزید ایک ہزار 77 بچے نمونیا میں مبتلا  جبکہ 12 بچے انتقال کر گئے۔

محکمۂ صحت پنجاب کا کہنا ہے کہ صوبے میں 24 دن میں 11 ہزار 597 بچے نمونیا میں مبتلا اور 220 اموات ہو چکی ہیں۔ لاہور میں 24 گھنٹوں کے دوران نمونیا سے 251 بچے متاثر ہوئے۔

گزشتہ ہفتے ملک میں 46ہزار671 ملیریا کیسز رپورٹ

ڈائریکٹر حفاظتی ٹیکہ جات ڈاکٹر مختار نے کہا ہے کہ پنجاب میں ان دنوں نمونیا پھیلا ہوا ہے، بچے کو پیدائش سے لے کر ڈیڑھ ماہ تک نمونیا ویکسین ایک خاص نمونیا سے بچاتی ہے، وائرل نمونیا میں نمونیا ویکسین مؤثر نہیں۔

ڈاکٹر مختار نے کہا کہ حفاظتی ٹیکہ جات کے تحت لگنے والی نمونیا ویکسین وافر مقدار میں موجود ہے، بچوں اور بڑوں کے لیے نمونیا کی ایک ہی ویکسین ہوتی ہے، عام مارکیٹ میں نمونیا ویکسین دستیاب نہیں۔

کووڈ-19 کے بعد چین میں ایک اور پُراسرار قسم کی بیماری پھیلنے لگی

انہوں نے کہا کہ حکومتی اجازت کے بغیر کوئی فارمیسی نمونیا ویکسین بیرون ملک سے نہیں منگوا سکتی، حکومت بیرون ملک سے صرف بچوں کو حفاظتی ٹیکہ جات کے تحت لگنے والی ویکسین منگواتی ہے۔


متعلقہ خبریں