3 بڑی سیاسی جماعتیں عوام کو ڈلیور کرنے میں ناکام ہو گئی ہیں، شاہد خاقان عباسی

شاہد خاقان عباسی

سابق وزیرِ اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ میں نے آئندہ عام انتخابات سے علیحدگی اختیار کی اس کا یہ ہرگز مطلب نہیں کہ سیاست چھور دی، نئی جماعت بنانے کا فیصلہ الیکشن کے بعد کروں گا۔

میڈیا سے گفتگو کے دوران شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پاکستان کی 3 بڑی سیاسی جماعتیں فیل ہو گئی ہیں ، ان کے پاس عوام کے مسائل کا حل نہیں ہے۔ 35 سال سے ن لیگ سے منسلک رہا، پارٹی پالیسی سے اختلاف ہے جس پر علیحدہ ہوا ہوں، نواز شریف میرے قائد تھے۔

ابرار الحق کا الیکشن سے دستبردار ہونے کا اعلان

انہوں نے کہا کہ میں نے الیکشن چھوڑا ہے سیاست نہیں، یہ الیکشن بے مقصد ہو چکا ہے۔ الیکشن جتنے غیر متنازعہ ہونگے اتنا ہی بہتر ہے، کسی کی سپورٹ سے ملک نہ پہلے چلا نہ چلے گا۔

آج کی 3 بڑی جماعتیں ناکام ہو چکی ہیں، سیاسی جماعتوں کے پاس عوام کے مسائل کا حل نہیں۔ پہلے کی طرح یہ سسٹم زیادہ دیر نہیں چلے گا۔

این اے 119،پی ٹی آئی کے امیدوار مسلم لیگ ن کے حق میں دستبردار

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نے کہا کہ الیکشن کے دوران نمائندوں کو طلب کر رہے ہیں۔ ابھی بھی وقت ہے کہ اس الیکشن کو غیر متنازعہ بنائیں ، پچھلے 5 سال سے نیب کے چکر لگا رہے ہیں، نیب کو کہا کہ پنجاب کی کرپشن سے میرا کیا تعلق ہے۔ نیب اور اینٹی کرپشن سیاسی جوڑ توڑ کیلئے استعمال ہورہے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں انکا کہنا تھا کہ 9 مئی کے واقعے کو ایک سانحہ سمجھتا ہوں۔ 9 مئی کہاں ہے، آج تو 9 فروری آنے کو ہے، ذمہ داروں کیخلاف کوئی کارروائی نہیں ہوئی۔

شاہد خاقان عباسی کا مزید کہنا تھا کہ ن لیگ کے ٹکٹ سے الیکشن میں حصہ لوں گا اور نہ ن لیگ کیخلاف الیکشن لڑوں گا ۔ الیکشن کے ماحول میں دباوکا اثر ہو گا۔


متعلقہ خبریں