کراچی کے بہت سارے حلقوں میں ن لیگ کا اثر ہے، خالد مقبول صدیقی

خالد مقبول صدیقی

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کےکنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ ایم کیو ایم کی طاقت کی وجہ سے جماعت اسلامی 2 دھڑوں میں تقسیم ہو گئی ہے۔

ہم نیوز کے پروگرام ”اپ فرنٹ ود مونا عالم ” میں گفتگو کے دوران خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ ہم نے لاہور میں مسلم لیگ ن سے ملاقات کی تھی اتحاد نہیں ،منظرنامے اور امکانات میں ن لیگ سے بات چیت ضروری ہے ۔

پاکستان میں سردیوں کی پہلی بارش برسنے کی اطلاعات

انہوں نے کہا کہ اس بار ہم سیاسی مدد دینے کی پوزیشن میں ہیں ،لہذا ہم چاہتے تھے کہ سب ہمارے مخالف کھڑے ہوں ،میں انتخابی اتحاد کو ووٹر کیساتھ زیادتی سمجھتا ہوں۔

اندرون سندھ میں جہاں امیدوار نہیں تھے مختلف جماعتوں سے ایڈجسٹمنٹ کی ، اب سندھ میں 15سال کے تسلسل کا اختتام کیا جا نا چاہیے۔

2024 کا انتخاب لڑنے والے 42 فیصد سابق ایم این ایز نے اپنی وفاداریاں تبدیل کرلیں

خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ کراچی کے بہت سارے حلقوں میں ن لیگ کا اثر ہے ، شہر قائد کو ہم نے واپس لینا تھا وہ لے لیا ہے ، اتوار کے جلسے سے کراچی کے نتائج کا اعلان ہو گیا ہے۔

کراچی میں جہاں ایم کیو ایم کا ووٹر ہے وہاں 70سےایک لاکھ تک یوسیز بنائیں ، کراچی میں ایم کیو ایم کی خیرات سے ہی کوئی میئربنتا ہے ۔ مرتضیٰ وہاب اختیارات کا رونا نہیں رو سکتے ، صوبائی حکومت ان کی تھی ۔

3 بڑی سیاسی جماعتیں عوام کو ڈلیور کرنے میں ناکام ہو گئی ہیں، شاہد خاقان عباسی

انکا مزید کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کی طاقت کی وجہ سے جماعت اسلامی 2 دھڑوں میں تقسیم ہو گئی ہے ، اور ہمارے مطالبات کو جماعت اسلامی نے اپنے جھنڈوں پر سجا لیا ہے ۔


متعلقہ خبریں