تحریک انصاف کا ایک ہفتے کے اندر انٹرا پارٹی انتخابات کروانے کا فیصلہ

تحریک انصاف

پی ٹی آئی کا وفاق اور پنجاب میں اپوزیشن میں بیٹھنے کافیصلہ


پاکستان تحریک انصاف نے پھر انٹرا پارٹی انتخابات کروانے کا فیصلہ کر لیا۔

تحریک انصاف کی جنرل باڈی کے اجلاس میں انٹرا پارٹی الیکشن کی قرارداد منظور کر لی گئی۔ قرارداد پاس ہونے کے بعد سات دن کے اندر انتخابات کروائے جائیں گے۔

انتخابات فیڈرل الیکشن کمیشن کی ہدایات کے مطابق اسلام آباد ، کراچی، لاہور سمیت ڈیجیٹلی بھی کروائے جا سکتے ہیں۔

کیسے الیکشن، کیسے نتائج؟ اکبر ایس بابر کا پی ٹی آئی انٹرا پارٹی الیکشن کے نتائج ماننے سے انکار

اجلاس میں رؤف حسن کو متفقہ طور پر تحریک انصاف کا چیف الیکشن کمشنر مقرر کر دیا گیا۔ انٹرا پارٹی انتخابات کے فیصلے تک عمر ایوب پارٹی کے چیف آرگنائزر ہوں گے، تحریک انصاف کی رابطہ ایپ پر رجسٹرڈ ممبران ہی الیکشن لڑنے اور ووٹ ڈالنے کے اہل ہوں گے۔

پی ٹی آئی کی جانب سے عام انتخابات کے لئے نامزد کردہ امیدوار آزاد نہیں سمجھے جائیں گے بلکہ الیکشن کے بعد بھی پی ٹی آئی کا ہی حصہ ہوں گے۔ قرارداد میں کہا گیا کہ عمران خان پی ٹی آئی کے بانی ہیں اور ہمیشہ ہمارے لیڈر رہیں گے۔


متعلقہ خبریں