امریکہ اپنا بیان درست کرے، ترجمان وزارت خارجہ


اسلام آباد: امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان ٹیلی فون کال کے حوالے سے پاک امریکہ وزارت خارجہ کے بیانات میں اختلاف سامنے آ گیا ہے اور ترجمان دفترخارجہ پاکستان ڈاکٹر فیصل نے امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے اعلامیے کو غلط بیانی پر مبنی قرار دے دیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرخارجہ اور وزیراعظم پاکستان کے درمیان ٹیلی فون کال کے حوالے سے امریکی وزارت خارجہ کے حقائق کے خلاف اعلامیے کو پاکستان سختی سے مسترد کرتا ہے۔


ترجمان دفترخارجہ کے مطابق امریکی وزیر خارجہ اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان پوری گفتگو میں کہیں بھی پاکستان کے اندر سرگرم مبینہ دہشت گردوں کے حوالے سے کوئی ذکر نہیں ہوا۔

ترجمان پاکستان دفتر خارجہ نے مطالبہ کیا کہ امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کے بیان کو فوری طور پر درست کیا جائے۔

اس سے قبل حکومت پاکستان کی جانب سے جاری کی گئی ایک پریس ریلیز میں بتایا گیا تھا کہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپئو نے وزیراعظم عمران خان کو ٹیلی فون کیا ہے اور انہیں وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے پر مبارکباد پیش کی ہے۔

پریس ریلیز کے مطابق امریکی وزیر خارجہ نے پاکستانی وزیراعظم کے ساتھ  دو طرفہ تعلقات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا اور پاکستان کی نئی حکومت کے ساتھ مل کر کام کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔

اس کے برعکس امریکی اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ مائیک پومپیو نے وزیراعظم عمران خان سے مطالبہ کیا کہ وہ پاکستان میں موجود دہشتگردوں کے خلاف بلا تفریق کاروائی کریں۔


متعلقہ خبریں