لاہور کے تفریحی پارک میں جھولا ٹوٹ گیا


 

لاہور: رائے ونڈ کے مقامی پارک میں جھولا ٹوٹنے سے 3 بچے زخمی ہوگئے جبکہ پولیس نے پارک کے 2 ملازموں کو گرفتار کر لیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بچے وسٹا پارک میں لگے کشتی جھولے میں سوار تھے کہ اس کا لاک کھل گیا اور جھولا ٹوٹنے سے بچے کئی فٹ ہوا میں اچھلنے کے بعد دور جا گرے۔

پارک میں موجود لوگوں نے بچوں کو فوری طور پر مقامی اسپتال میں منتقل کیا جہاں انہیں ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے کے بعد ڈسچارج کر دیا گیا۔

جھولا ٹوٹنے پر پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش کا آغاز کر دیا ہے اور پارک کے مالک کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

اس سے قبل کراچی کے عسکری پارک میں گزشتہ ماہ جھولا گرنے سے 12  سالہ بچی کشف جاں بحق اور دیگرسات افراد زخمی ہو گئے تھے۔

جھولا چینی کمپنی و انجینئرز نے لگایا تھا اور جسے  عوام الناس کے لیے واقعہ سے ایک ہفتہ قبل ہی کھولا گیا تھا۔

عسکری پارک میں جھولا گرنے کی ذمہ داری پارک انتظامیہ اور جھولا لگانے والے ٹھیکیدار پر عائد کی گئی تھی۔

جھولا گرنے کی تحقیقات کرنے والی 3 مختلف کمیٹیوں سے ملنے والی معلومات کی روشنی میں بنائی گئی رپورٹ میں انکشاف ہوا تھا کہ عسکری پارک انتظامیہ نے جھولے کی تنصیب کرتے ہوئے کراچی میٹرو پولیٹن کارپوریشن سے کسی قسم کا اجازت نامہ حاصل نہیں کیا تھا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گرنے والا جھولا استعمال شدہ تھا اور جھولے کو ٹرائل فیز کے دوران ہی عوام کے لیے کھول دیا گیا تھا۔

تحقیقاتی رپورٹ میں جھولا گرنے کی بڑی وجہ ٹائی شافٹ اور بولٹس کی ناقص ویلڈنگ کو قرار دیا گیا۔

کمشنر کراچی کو پیش کی گئی رپورٹ کے مطابق جھولے کی دیکھ بھال کے لیے نا تجربہ کار افراد کو بھرتی کیا گیا جنہوں نے کسی جھولے کی لاگ بک تک نہیں بنائی۔


متعلقہ خبریں