روس نے ایبولا کی پاوڈر ویکسین بنا لی


سینٹ پیٹرزبرگ: روس نے شعبہ طب میں ایک اور معرکہ سر کر لیا ہے۔ جس طرح روس کے ماہرین طب نے اس سے قبل ایبولا وائرس کی ویکسین “گیم ایویک کومبی” بنائی تھی اسی طرح انہوں نے ایک بار پھر ایبولا کے مقابلے کے لیے ویکسین پاؤڈر بنا لیا ہے۔

روسی وزارت صحت نے اپنے اعلامیے میں بتایا ہے کہ روس نے ایبولا کے لئے ایک نئی پاؤڈر ویکسین تیار کر لی ہے۔

اعلامیے کے مطابق اس نئی دوا کو رضاکاروں پر آزمایا جا رہا ہے۔ کامیابی کی صورت میں عوام کے لیے ویکسین کی فراہمی کا عمل شروع کر دیا جائے گا۔

روس کی پہلی ایبولا ویکسین 2016 میں تیار کی گئی تھی۔ 

2017 میں گینی میں اس ویکسین کی ٹیسٹنگ کا عمل شروع ہوا۔ گیم ایویک کومبی کے نام سے دستیاب یہ دوائی دنیا کی پہلی ریجسٹرڈ ایبولا ویکسین تھی

 
روس کے علاوہ چین نے بھی پاؤڈر کی صورت میں ایبولا وکسین تیار کی ہے مگر اب تک اسے بیرون ملک استعمال کے لئے دستیاب نہیں کیا گیا۔


متعلقہ خبریں